Skip to content

Koi Duniya E Ata Mein Nahin Hamta Tera Naat Lyrics

Koi Duniya E Ata Mein Nahin Hamta Tera Naat Lyrics

By | Published

Koi Duniya E Ata Mein Nahin Hamta Tera Naat lyrics Naat is Sung by Zohaib Ashrafi written by Maulana Ahmad Raza Khan Bareilvi and officially this naat Video recorded and published by Zohaib Ashrafi.

NaatKoi Duniya E Ata Mein Nahin Hamta Tera
Naat KhawanZohaib Ashrafi
LyricistMaulana Ahmad Raza Khan Bareilvi
LabelZohaib Ashrafi

Koi Duniya E Ata Mein Nahin Hamta Tera Naat Lyrics

Koi Duniya-e-ataa Mein Nahi Hamta Tera
Ho Jo Hatim Ko Muyasar Ye Nazara Tera
Keh Uthay Dekh Ke Bakhshish Mein Yeh Rutba Tera
Wah Kya Jodo Karam Hai Shah-e-bat’ha Tera

Nahi Santa Hi Nahi Mangne Wala Tera
Kuch Bashar Hone Ke Nate Tujhe Khud Sa Janen
Aur Kuch Mehaz Bayani He Khuda Ka Janen
Un Ki Auqaat Hi Keya Hai Ke Itna Janen

Farash Wale Teri Shaukat Ka Ulo Kya Janen
Khusarwa Arsh Pe Udta Hai Pharera Tera
Mujh Se Na Cheez Pe Hay Inayat Kitni
To Ne Har Kaam Pe Ki Hay Meri Himayat Kitni

Kya Bataon Teri Rehmat Mein Hai Wussat Kitni
Ik Mein Kya Mere Issia Ki Haqeqat Kitni
Mujhse So-lakh Ko Kafi Hai Ishara Tera
Nazr E Ushaq E Nabi Hai Yeh Mera Harf E Ghareeb

Mimbar O Wuaz Mein Larte Rahe Aapas Mein Khateeb
Yeh Aqeedah Rahe Allah Kere Mujh Ko Naseeb
Mein To Maalik Hi Kahoon Ga Ke Ho Maalik Ke Habib
Yani Mehboob-o-muhib Mein Nahi Mera Tera

Tujh Se Har Chand Woh Fazail Mein Rafi
Kar Naseer Aaj Magar Fikar E Raza Ki To’si
Paas Hai Is Ke Shafaat Ka Waseela Bhi Vaqi
Teri Sarkar Mein Lata Hai “Raza” Us Ko Shafi

Jo Mera Ghous Hai Aur Laadla Beta Tera
Nahi Sunta Hi Nahi Mangne Wala Tera

Koi Duniya E Ata Mein Nahin Hamta Tera Naat Lyrics In Urdu

کوئی دُنیا عطا میں نہیں ہمتا تیرا
ہو جو حاتم کو میسر یہ نظارہ تیرا
کہہ اٹھے دیکھ كے بخشش میں یہ رتبہ تیرا
واہ کیا جودو کرم ہے شاہی بتھا تیرا
نہیں سنتا ہی نہیں مانگنے والا تیرا .

کچھ بشر ہونے كے ناتے تجھے خود سا جانے
اور کچھ محظ پایامی ہی خدا کا جانے

انکی اوقات ہی کیا ہے كے یہ اتنا جانے
فرش والے تیری شوکت کا ولو کیا جانے

کوسراوا عرش پہ اُڑتا ہے پھریرا تیرا .

کئی پوشتوں سے غلامی کا یہ رشتہ ہے بحال
یہی تیفلی اور جوانی كے بتائے محو سال

اب بڑھاپے میں خدارا ہمیں یوں دَر سے نا تال

تیرے توگدوں پہ پلے غیر کی ٹھوکر پہ نا ڈال
جحیدکیا کھائے کہا چچود كے صدقہ تیرا .

غم دوران سے گھابرایی تو قصے کہیے
اب اپنی الجھن کسی باتلایی قصے کہیے

چِیر کر دِل کسی دیخلایی قصے کہیے
کس کا منہ تکیے کہا جائیے قصے کہیے

تیرے ہی قدموں پہ مٹ جائے یہ پالا تیرا .
نظری وششاقی نبی ہے یہ میرا حارفی غریب

میمباری وعظ پہ لڑتے رہے آپس میں خطیب
یہ عقیدہ رہے اللہ کرے مجھ کو نصیب

میں تو مالک ہی کہونگا كے ہو مالک كے حبیب
ےعنی میحبوبو محب میں نہیں میرا تیرا .

تجھ سے ہر چند وہ ہے قادرو فازاایل میں رافیی ’
کر نصیر آج مگر فقری رضا کی تَوسِیع ’

پاس ہے اسکے شفا ’ ایٹ کا وسیلہ بھی واقیی ’
تیری سرکار میں لاتا ہے رضا اسکو شَفِیع ’

جو میرا جاوس ہے اور لاڈلا بیٹا تیرا

Naat Video

FAQs

Who is the Naat Khawan of Koi Duniya E Ata Mein Nahin Hamta Tera?

The Naat Khawan of Koi Duniya E Ata Mein Nahin Hamta Tera is Zohaib Ashrafi.

Who is the Lyrics Writer (Lyricist) of Koi Duniya E Ata Mein Nahin Hamta Tera?

The Lyrics Writer of Koi Duniya E Ata Mein Nahin Hamta Tera is Maulana Ahmad Raza Khan Bareilvi.

What is Music Label or officially Published Koi Duniya E Ata Mein Nahin Hamta Tera Naat?

Zohaib Ashrafi published and recorded this Naat.

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *